Holy quran - listen online



English


The Holy Quran : Chapter 12: Yusuf یُوسُف

English Translation by Maulvi Sher Ali (ra)      اردو ترجمہ [حضرت مرزا طاہر احمد، خلیفۃ المسیح الرابع]
Get flash to see this player.

[12:1] In the name of Allah, the Gracious, the Merciful.
[12:1] اللہ کے نام کے ساتھ جو بے انتہا رحم کرنے والا، بِن مانگے دینے والا (اور) بار بار رحم کرنے والا ہے۔

[12:2] Alif Lam Ra. These are verses of the clear Book.
[12:2] اَنَا اللّٰہُ اَرٰی: میں اللہ ہوں۔ میں دیکھتا ہوں۔ یہ ایک کھلی کھلی کتاب کی آیات ہیں۔

[12:3] We have revealed it — the Qur'an in Arabic — that you may understand.
[12:3] یقیناً ہم نے اسے عربی قرآن کے طور پر نازل کیا تاکہ تم عقل کرو۔

[12:4] We narrate unto thee the most beautiful narration by revealing to thee this Qur'an, though thou wast, before this, of those not possessed of requisite knowledge.
[12:4] ہم نے جو یہ قرآن تجھ پر وحی کیا اس کے ذریعہ ہم تیرے سامنے ثابت شدہ تاریخی حقائق میں سے بہترین بیان کرتے ہیں جبکہ اس سے پہلے (اس بارہ میں) تُو غافلوں میں سے تھا۔

[12:5] Remember the time when Joseph said to his father, 'O my father, I saw in a dream eleven stars and the sun and the moon, I saw them making obeisance to me.'
[12:5] (یاد کرو) جب یوسف نے اپنے باپ سے کہا اے میرے باپ! یقیناً میں نے (رؤیا میں) گیارہ ستارے اور سورج اور چاند دیکھے ہیں۔ (اور) میں نے انہیں اپنے لئے سجدہ ریز دیکھا۔

[12:6] He said, 'O my darling son, relate not thy dream to thy brothers, lest they contrive a plot against thee; for Satan is to man an open enemy.
[12:6] اس نے کہا اے میرے پیارے بیٹے! اپنی رؤیا اپنے بھائیوں کے سامنے بیان نہ کرنا ورنہ وہ تیرے خلاف کوئی چال چلیں گے۔ یقیناً شیطان انسان کا کھلاکھلا دشمن ہے۔



[12:7] 'And thus shall it be as thou hast seen, thy Lord will choose thee and teach thee the interpretation of things and perfect His favour upon thee and upon the family of Jacob as He perfected it upon two of thy forefathers — Abraham and Isaac. Verily, thy Lord is All-Knowing, Wise.'
[12:7] اور اسی طرح تیرا ربّ تجھے (اپنے لئے) چُن لے گا اور تجھے معاملات کی تہ تک پہنچنے کا علم سکھادے گا اور اپنی نعمت تجھ پر تمام کرے گا اور آلِ یعقوب پر بھی جیسا کہ اس نے اُسے تیرے باپ دادا اِبراہیم اور اسحاق پر پہلے تمام کیا تھا۔ یقیناً تیرا ربّ دائمی علم رکھنے والا (اور) حکمت والا ہے۔

[12:8] Surely, in Joseph and his brethren there are Signs for the inquirers.
[12:8] یقیناً یوسف اور اس کے بھائیوں (کے واقعہ) میں پوچھنے والوں کے لئے کئی نشانات ہیں۔

[12:9] When they said, 'Verily, Joseph and his brother are dearer to our father than we are, although we are a strong party. Surely, our father is in manifest error.
[12:9] (یاد کرو) جب انہوں نے کہا کہ یقیناً یوسف اور اس کا بھائی ہمارے باپ کو ہم سے زیادہ پیارے ہیں حالانکہ ہم ایک مضبوط ٹولی ہیں۔ یقیناً ہمارا باپ ایک ظاہر و باہر غلطی میں مبتلا ہے۔

[12:10] 'Kill Joseph or cast him out to some distant land, so that your father's favour may become exclusively yours and you can thereafter become a righteous people.'
[12:10] یوسف کو قتل کر ڈالو یا اُسے کسی جگہ پھینک آؤ تو تمہارے باپ کی توجہ صرف تمہارے لئے رہ جائے گی اور تم اس کے بعد نیک لوگ بن جانا۔
[12:11] One of them said, 'Kill not Joseph, but if you must do something, cast him into the bottom of a deep well; some of the travellers will pick him up.'
[12:11] ان میں سے ایک کہنے والے نے کہا یوسف کو قتل نہ کرو بلکہ اُسے کسی کنویں کی اوجھل تہوں میں پھینک دو جو چراگاہ کے پاس واقع ہو۔ اسے کوئی قافلہ اٹھا لے جائے گا۔ (یہی کرو) اگر تم کچھ کرنے والے ہو۔

[12:12] They said, 'O our father, why dost thou not trust us with respect to Joseph, when we are certainly his sincere well-wishers?
[12:12] انہوں نے کہا اے ہمارے باپ! تجھے کیا ہوا ہے کہ تو یوسف کے بارہ میں ہم پر اعتماد نہیں کرتا جبکہ ہم تو یقیناً اس کے خیر خواہ ہیں۔

[12:13] 'Send him with us tomorrow that he may enjoy himself and play, and we shall surely keep guard over him.'
[12:13] اسے کل ہمارے ساتھ بھیج دے تا وہ کھاتا پھرے اور کھیلے جبکہ ہم اس کے یقیناً محافظ ہوں گے۔

[12:14] He said, 'It grieves me that you should take him away, and I fear lest the wolf should devour him while you are heedless of him.'
[12:14] اس نے کہا یقیناً مجھے یہ بات فکر میں ڈالتی ہے کہ تم اسے لے جاؤ اور میں ڈرتا ہوں کہ کہیں اسے بھیڑیا نہ کھا جائے جبکہ تم اس سے غافل ہو۔

[12:15] They said, 'Surely, if the wolf devour him while we are a strong party, then we shall indeed be great losers.'
[12:15] انہوں نے کہا اگر اسے بھیڑیا کھا جائے جبکہ ہم ایک مضبوط ٹولی ہیں تب تو ہم یقیناً بہت نقصان اٹھانے والے ہوں گے۔

[12:16] So, when they took him away, and agreed to put him into the bottom of a deep well, they had their malicious design carried out; and We sent a revelation to him, saying, 'Thou shalt surely one day tell them of this affair of theirs and they shall not know.'
[12:16] پس جب وہ اسے لے گئے اور اس بات پر متفق ہوگئے کہ اسے ایسے کنویں کی اوجھل تہوں میں پھینک دیں جو چراہ گاہ کے پاس واقع تھا تو ہم نے اس کی طرف وحی کی کہ تُو (ایک دن) یقیناً انہیں ان کی اس کارستانی سے آگاہ کرے گا اور انہیں کچھ پتہ نہ ہو گا (کہ تُو کون ہے)۔

[12:17] And they came to their father in the evening, weeping.
[12:17] اور رات کے وقت وہ اپنے باپ کے پاس روتے ہوئے آئے۔

[12:18] They said, 'O our father, we sent forth racing with one another, and left Joseph with our things, and the wolf devoured him, but thou wilt not believe us even if we speak the truth.'
[12:18] انہوں نے کہا اے ہمارے باپ! یقیناً ہم ایک دوسرے سے دوڑ لگاتے ہوئے (دُور) چلے گئے اور یوسف کو ہم نے اپنے سامان کے پاس چھوڑ دیا پس اسے بھیڑیا کھا گیااور توُکبھی ہماری ماننے والا نہیں خواہ ہم سچے ہی ہوں۔

[12:19] And they came with false blood on his shirt. He said, 'Nay, but your souls have made a great thing appear light in your eyes. So now comely patience is good for me. And it is Allah alone Whose help is to be sought against what you assert.'
[12:19] اور وہ اس کی قمیص پر جھوٹا خون لگا لائے۔ اس نے کہا بلکہ تمہارے نفوس نے ایک بہت سنگین بات تمہارے لئے معمولی اور آسان بنا دی ہے۔ پس صبرجمیل(کے سوا میں کیا کر سکتا ہوں) اور اللہ ہی ہے جس سے اس (بات) پر مدد مانگی جائے جو تم بیان کرتے ہو۔

[12:20] And there came a caravan of travellers and they sent their waterdrawer. And he let down his bucket into the well. 'Oh, good news!' said he, 'Here is a youth!' And they concealed him as a piece of merchandise, and Allah knew full well what they did.
[12:20] اور ایک قافلہ آیا اور انہوں نے اپنا پانی نکالنے والا بھیجا تو اس نے اپنا ڈول ڈال دیا۔ اس نے کہا اے (قافلہ والو) خوشخبری! یہ تو ایک لڑکا ہے۔ اور انہوں نے اسے ایک پونجی کے طور پر چھپا لیا اور اللہ اسے خوب جانتا تھا جو وہ کرتے تھے۔
[12:21] And they sold him for a paltry price, a few dirhems, and they were not desirous of it.
[12:21] اور انہوں نے اسے معمولی قیمت چند دراہم کے عوض فروخت کر دیا اور وہ اس کے بارہ میں بالکل بے رغبت تھے۔

[12:22] And the man from Egypt who bought him said to his wife, 'Make his stay honourable. Maybe he will be of benefit to us; or we shall adopt him as a son.' And thus did We establish Joseph in the land, and We did so that We might also teach him the interpretation of things. And Allah has full power over His decree, but most men know it not.
[12:22] اور جس نے اُسے مصرسے خریدا اپنی بیوی سے کہا اسے عزت کے ساتھ ٹھہراؤ۔ ہو سکتا ہے کہ یہ ہمیں فائدہ پہنچائے یا ہم اسے اپنا بیٹا بنا لیں۔ اور اس طریقہ سے ہم نے یوسف کے لئے زمین میں جگہ بنادی اور (یہ خاص انتظام اس لئے کیا) تاکہ ہم اسے معاملات کی تہہ تک پہنچنے کا علم سکھا دیں اور اللہ اپنے فیصلہ پر غالب رہتا ہے لیکن اکثر لوگ نہیں جانتے۔

[12:23] And when he attained his age of full strength, We granted him judgment and knowledge. And thus do We reward the doers of good.
[12:23] اور جب وہ اپنی مضبوطی کی عمر کو پہنچا تو اسے ہم نے حکمت اور علم عطا کئے اور اسی طرح ہم احسان کرنے والوں کو جزا دیا کرتے ہیں۔

[12:24] And she, in whose house he was, sought to seduce him against his will. And she bolted the doors, and said, 'Now come.' He said, 'I seek refuge with Allah. He is my Lord. He has made my stay with you honourable. Verily, the wrongdoers never prosper.'
[12:24] اور اُس عورت نے جس کے گھر میں وہ تھا اسے اس کے نفس کے بارہ میں پھسلانے کی کوشش کی اور دروازے بند کر دیئے اور کہا تم میری طرف آؤ۔ اس (یوسف) نے کہا خدا کی پناہ! یقیناً میرا ربّ وہ ہے جس نے میرا ٹھکانا بہت اچھا بنایا۔ یقیناً ظالم کامیاب نہیں ہوا کرتے۔

[12:25] And she made up her mind with regard to him, and he made up his mind with regard to her. If he had not seen a manifest Sign of his Lord, he could not have shown such determination. Thus was it, that We might turn away from him evil and indecency. Surely, he was one of Our chosen servants.
[12:25] اور یقیناً وہ اس کا پختہ ارادہ کرچکی تھی اور وہ (یعنی یوسف) بھی اس کا ارادہ کرلیتا اگر اپنے ربّ کی ایک عظیم بُرہان نہ دیکھ چکا ہوتا۔ یہ طریق اس لئے اختیار کیا تا کہ ہم اس سے بدی اور فحشاءکو دور رکھیں۔ یقیناً وہ ہمارے خالص کئے گئے بندوں میں سے تھا۔

[12:26] And they both raced to the door, and she tore his shirt from behind, and they found her lord at the door. She said, 'What shall be the punishment of one who intended evil to thy wife, save imprisonment or a grievous chastisement?'
[12:26] اور وہ دونوں دروازے کی طرف لپکے اور اس (عورت) نے پیچھے سے (اُسے کھینچتے ہوئے) اس کی قمیص پھاڑ دی اور ان دونوں نے اس کے سرتاج کو دروازے کے پاس پایا۔اُس (عورت) نے کہا جو تیرے گھر والی سے بدی کا ارادہ کرے اس کی جزا قید کئے جانے یا درد ناک عذاب کے سوا اور کیا ہو سکتی ہے۔

[12:27] He said, 'She it was who sought to seduce me against my will.' And a witness of her household bore witness saying, 'If his shirt is torn from the front, then she has spoken the truth and he is of the liars.
[12:27] اس (یعنی یوسف) نے کہا اِسی نے مجھے میرے نفس کے بارہ میں پھسلانے کی کوشش کی تھی۔ اور اس کے گھر والوں ہی میں سے ایک گواہ نے گواہی دی کہ اگر اُس کی قمیص سامنے سے پھٹی ہوئی ہے تو یہی سچ کہتی ہے اور وہ جھوٹوں میں سے ہے۔

[12:28] 'But if his shirt is torn from behind, then she has lied and he is of the truthful.'
[12:28] اور اگر اُس کی قمیص پیچھے سے پھٹی ہوئی ہے تو یہ جھوٹ بول رہی ہے اوروہ سچوں میں سے ہے۔

[12:29] So when he saw his shirt torn from behind, he said, 'Surely, this is a device of you women. Your device is indeed mighty.
[12:29] پس جب اس نے اس کی قمیص پیچھے سے پھٹی ہوئی دیکھی تو (بیوی سے) کہا یقیناً یہ (واقعہ) تمہاری چالبازی سے ہوا۔ یقیناً تمہاری چالبازی (اے عورتو!) بہت بڑی ہوتی ہے۔

[12:30] 'O Joseph, turn away from this and thou, O woman, ask forgiveness for thy sin. Certainly, thou art of the guilty.'
[12:30] اے یوسف! اس سے اِعراض کر اور تُو (اے عورت!) اپنے گناہ کی وجہ سے استغفار کر۔ یقیناً تُو ہی ہے جو خطاکاروں میں سے تھی۔
[12:31] And women in the city said, 'The wife of the 'Aziz seeks to seduce her slave-boy against his will. He has infatuated her with love. Indeed, we see her in manifest error.'
[12:31] اور شہر کی عورتوں نے کہا کہ سردار کی بیوی اپنے غلام کو اس کے نفس کے بارہ میں پھسلاتی ہے۔ اس نے محبت کے اعتبار سے اس کے دل میں گھر کر لیا ہے۔ یقیناً ہم اسے ضرور ایک کھلی کھلی گمراہی میں پاتی ہیں۔

[12:32] And when she heard of their crafty design, she sent for them and prepared for them a repast, and gave every one of them a knife and then said to Joseph, 'Come forth to them.' And when they saw him they thought much of him and cut their hands, and said, 'Allah be glorified! This is not a human being; this is but a noble angel.'
[12:32] پس جب اُس نے اُن کی مکّاری کی بات سنی تو اُنہیں بُلا بھیجا اور اُن کے لئے ایک ٹیک لگاکر بیٹھنے کی جگہ تیار کی اور ان میں سے ہر ایک کو ایک ایک چھری پکڑا دی اور اس(یعنی یوسف) سے کہا کہ ان کے سامنے جا۔ پس جب انہوں نے اسے دیکھا اسے بہت عالی مرتبہ پایا اور اپنے ہاتھ کاٹ لئے اور کہا پاک ہے اللہ۔ یہ انسان نہیں۔ یہ تو ایک معزز فرشتہ کے سوا کچھ نہیں۔

[12:33] She said, 'And this is he about whom you blamed me. I did seek to seduce him against his will, but he preserved himself from sin. And now if he do not what I bid him, he shall certainly be imprisoned and become one of the humbled.'
[12:33] وہ بولی یہی وہ شخص ہے جس کے بارہ میں تم مجھے ملامت کرتی تھیں اور یقیناً میں نے اسے اس کے نفس کے بارہ میں پھسلانے کی کوشش کی تو وہ بچ گیا اور اگر اس نے وہ نہ کیا جو مَیں اسے حکم دیتی ہوں تو وہ ضرور قید کیا جائے گا اور ضرور ذلیل لوگوں میں سے ہو جائے گا۔



[12:34] He said, 'O my Lord, I would prefer prison to that to which they invite me; and unless Thou turn away their guile from me I shall incline towards them and be of the ignorant.'
[12:34] اس نے کہا اے میرے ربّ! قید خانہ مجھے زیادہ پیارا ہے اس سے جس کی طرف وہ مجھے بلاتی ہیں۔ اور اگر تُو مجھ سے اُن کی تدبیر (کا مُنہ) نہ پھیر دے تو میں ان کی طرف جھک جاؤں گا اور میں جاہلوں میں سے ہوجاؤں گا۔

[12:35] So his Lord heard his prayer, and turned away their guile from him. Verily, He is the All-Hearing, the All-Knowing.
[12:35] پس اس کے ربّ نے اُس کی دعا کو سنا اور اس سے ان کی چال کو پھیر دیا۔ یقیناً وہی بہت سننے والا (اور) دائمی علم رکھنے والا ہے۔

[12:36] Then it occurred to them (the men) after they had seen the signs of his innocence that, to preserve their good name, they should imprison him for a time.
[12:36] پھر بعد اُس کے جو آثار انہوں نے دیکھے اُن پر ظاہر ہوا کہ کچھ عرصہ کے لئے اسے ضرور قیدخانہ میں ڈال دیں۔

[12:37] And with him there entered the prison two young men. One of them said, 'I saw myself in a dream pressing wine.' And the other said, 'I saw myself in a dream carrying upon my head bread of which the birds are eating. Inform us of the interpretation thereof; for we see thee to be of the righteous.'
[12:37] اور اس کے ساتھ قید خانہ میں دو نوجوان بھی داخل ہوئے۔ ان میں سے ایک نے کہا کہ یقیناً میں (رؤیا میں) اپنے آپ کو دیکھتا ہوں کہ میں شراب بنانے کی خاطر رَس نچوڑ رہا ہوں اور دوسرے نے کہا کہ میں (رؤیا میں) اپنے آپ کو دیکھتا ہوں کہ اپنے سر پر روٹیاں اٹھائے ہوئے ہوں جس میں سے پرندے کھا رہے ہیں۔ ہمیں ان کی تعبیر سے مطلع کر۔ یقیناً ہم تجھے احسان کرنے والے لوگوں میں سے دیکھ رہے ہیں۔

[12:38] He replied, 'The food which you are given shall not come to you but I shall inform you of the interpretation thereof before it comes to you. This is on account of what my Lord has taught me. I have renounced the religion of the people who do not believe in Allah and who are disbelievers in the Hereafter.
[12:38] اس نے کہا کہ تم دونوں تک وہ کھانا نہیں آئے گا جو تمہیں دیا جاتا ہے مگر میں تمہارے پاس اُس کے آنے سے پہلے ہی اِن (خوابوں) کی تعبیر سے تم دونوں کو مطلع کر چکا ہوں گا۔ یہ (تعبیر) اس (علم) میں سے ہے جو میرے ربّ نے مجھے سکھایا۔ یقیناً میں اس قوم کے مسلک کو چھوڑ بیٹھا ہوں جو اللہ پر ایمان نہیں لاتے تھے اور وہ آخرت کا انکار کرتے تھے۔



[12:39] 'And I have followed the religion of my fathers, Abraham and Isaac and Jacob. We cannot indeed associate anything as partner with Allah. This is of Allah's grace upon us and upon mankind, but most men are ungrateful.
[12:39] اور میں نے اپنے آباءو اجداد ابراہیم اور اسحاق اور یعقوب کے دین کی پیروی کی۔ ہمارے لئے ممکن نہ تھا کہ اللہ کے ساتھ کسی چیزکو شریک ٹھہراتے۔ یہ اللہ کے فضل ہی سے تھا جو اس نے ہم پر اور (مومن) انسانوں پر کیا لیکن اکثر انسان شکر نہیں کرتے۔

[12:40] 'O my two companions of the prison, are diverse lords better or Allah, the One, the Most Supreme?
[12:40] اے قید خانہ کے دونوں ساتھیو! کیا کئی مختلف ربّ بہتر ہیں یا ایک صاحبِ جبروت اللہ ؟
[12:41] 'You worship nothing beside Allah, but mere names that you have named, you and your fathers; Allah has sent down no authority for that. The decision rests with Allah alone. He has commanded that you shall not worship anything save Him. That is the right religion, but most men know it not.
[12:41] تم اُس کے سوا عبادت نہیں کرتے مگر ایسے ناموں کی جو تم نے اور تمہارے آباءو اجداد نے خود ہی اُن (فرضی خداؤں) کو دے رکھے ہیں جن کی تائید میں اللہ نے کوئی غالب آنے والی برہان نہیں اتاری۔ فیصلے کا اختیار اللہ کے سوا کسی کو نہیں۔ اس نے حکم دیا ہے کہ اس کے سوا تم کسی کی عبادت نہ کرو۔ یہ قائم رہنے والا اور قائم رکھنے والا دین ہے لیکن اکثر انسان نہیں جانتے۔

[12:42] 'O my two companions of the prison, as for one of you, he will pour out wine, for his lord to drink; and as for the other, he will be crucified so that the birds will eat from off his head. The matter about which you inquired has been decreed.'
[12:42] اے قید خانہ کے دونوں ساتھیو! جہاں تک تم دونوں میں سے ایک کا تعلّق ہے تو وہ اپنے آقا کو شراب پلائے گا اور جہاں تک دوسرے کا تعلق ہے تو وہ سُولی پر چڑھایا جائے گا پس پرندے اس کے سر میں سے کچھ (نوچ نوچ کر) کھائیں گے۔ اُس بات کا فیصلہ سنا دیا گیا ہے جس کے بارہ میں تم دونوں استفسار کر رہے تھے۔

[12:43] And of the two, he said to him whom he thought to be the one who would escape: 'Mention me to thy lord.' But Satan caused him to forget mentioning it to his lord, so he remained in prison for some years.
[12:43] اور اس نے اُس شخص سے جس کے متعلق خیال کیا تھا کہ ان دونوں میں سے وہ بچ جائے گا کہا کہ اپنے آقا کے پاس میرا ذکر کرنا مگر شیطان نے اُسے بھلا دیا کہ اپنے آقا کے پاس (یہ) ذکر کرے۔ پس وہ چند سال تک قید خانہ میں پڑا رہا۔

[12:44] And the King said, 'I see in a dream seven fat kine which seven lean ones eat up, and seven green ears of corn and seven others withered. O ye chiefs, explain to me the meaning of my dream if you can interpret a dream.'
[12:44] اور بادشاہ نے (دربار میں) بیان کیا کہ میں سات موٹی گائیں دیکھتا ہوں جنہیں سات دُبلی پتلی گائیں کھا رہی ہیں اور سات سرسبز بالیاں اور کچھ دوسری سوکھی ہوئی بھی (دیکھتا ہوں)۔ اے سردارو! مجھے میری رؤیا کے بارہ میں تعبیر سمجھاؤ اگر تم خوابوں کی تعبیر کرسکتے ہو۔

[12:45] They replied, 'They are confused dreams, and we do not know the interpretation of such confused dreams.'
[12:45] انہوں نے کہا یہ پراگندہ خیالات پر مشتمل نفسانی خوابیں ہیں اور ہم نفسانی خوابوں کی تعبیر کا علم نہیں رکھتے۔

[12:46] And he of the two who had escaped, and who now remembered after a time, said, 'I will let you know its interpretation, therefore send ye me.'
[12:46] اور اس شخص نے جو اُن دونوں (قیدیوں) میں سے بچ گیا تھا اور ایک طویل مدت کے بعد اس نے (یوسف کو) یاد کیا، یہ کہا کہ میں تمہیں اس کی تعبیر بتاؤں گا پس مجھے (یوسف کی طرف) بھیج دو۔

[12:47] 'Joseph! O thou man of truth, explain to us the meaning of seven fat kine which seven lean ones devour, and of seven green ears of corn and seven others withered; that I may return to the people so that they may know.'
[12:47] یوسف اے راستباز! ہمیں سات موٹی گائیوں کا جنہیں سات دُبلی گائیں کھا رہی ہوں اور سات سبز و شاداب بالیوں اور دوسری سوکھی ہوئی بالیوں کے بارہ میں مسئلہ سمجھا تاکہ میں لوگوں کی طرف واپس جاؤں شاید کہ وہ (اس کی تعبیر) معلوم کرلیں۔

[12:48] He replied, 'You shall sow for seven years, working hard and continuously, and leave what you reap in its ear, except a little which you shall eat.
[12:48] اس نے کہا کہ تم مسلسل سات سال تک کاشت کرو گے۔ پس جو تم کاٹو اسے اس کی بالیوں میں رہنے دو سوائے تھوڑی مقدار کے جو تم اس میں سے کھاؤ گے۔

[12:49] 'Then there shall come after that seven hard years which shall consume all that you shall have laid by in advance for them except a little which you may preserve.
[12:49] پھر اس کے بعد سات بہت سخت (سال) آئیں گے جو وہ کھا جائیں گے جو تم نے ان کے لئے آگے بھیجا ہوگا سوائے اس میں سے تھوڑے سے حصہ کے جو تم (آئندہ کاشت کے لئے) سنبھال رکھو گے۔

[12:50] 'Then there shall come after that a year in which people shall be relieved and in which they shall give presents to each other.'
[12:50] پھر اس کے بعد ایک سال آئے گا جس میں لوگ خوب سیراب کئے جائیں گے اور اس میں وہ رس نچوڑیں گے۔
[12:51] And the King said, 'Bring him to me.' But when the messenger came to him, he said, 'Go back to thy lord and ask him how fare the women who cut their hands: for, my Lord well knows their crafty design.'
[12:51] بادشاہ نے کہا اسے میرے پاس لاؤ۔ پس جب ایلچی اس (یعنی یوسف) کے پاس پہنچا تو اس نے کہا اپنے آقا کی طرف لوٹ جاؤ اور اس سے پوچھو اُن عورتوں کا کیا قصہ ہے جو اپنے ہاتھ کاٹ بیٹھی تھیں۔ یقیناً میرا ربّ ان کی چال کو خوب جانتا ہے۔

[12:52] He (the King) said to the women, 'What was the matter with you when you sought to seduce Joseph against his will?' They said, 'He kept away from sin for fear of Allah — we have known no evil against him.' The wife of the 'Aziz said, 'Now has the truth come to light. It was I who sought to seduce him against his will, and surely, he is the truthful.'
[12:52] اس (بادشاہ) نے پوچھا (اے عورتو!) بتاؤ تمہارا کیا معاملہ تھا جب تم نے یوسف کو اس کے نفس کے بارہ میں پھسلانا چاہا تھا۔ انہوں نے کہا پاک ہے اللہ۔ ہمیں تو اس کے خلاف کسی بُرائی کا علم نہیں۔ سردار کی بیوی نے کہا اب سچائی ظاہر ہو چکی ہے۔ میں نے ہی اسے اس کے نفس کے بارہ میں پھسلانا چاہا تھا اور یقیناً وہ صادقوں میں سے ہے۔

[12:53] Joseph said, 'I asked for that enquiry to be made so that he (the 'Aziz) might know that I was not unfaithful to him in his absence and that Allah suffers not the device of the unfaithful to succeed.
[12:53] یہ اس لئے ہوا تاکہ وہ (عزیزِ مصر) جان لے کہ میں (یعنی یوسف) نے اس کی عدم موجودگی میں اس کی کوئی خیانت نہیں کی اور یقیناً اللہ خیانت کرنے والوں کی چال کو سرے نہیں چڑھاتا۔

[12:54] 'And I do not hold my own self to be free from weakness; for, the soul is surely prone to enjoin evil, save that whereon my Lord has mercy. Surely, my Lord is Most Forgiving, Merciful.'
[12:54] اور میں اپنے نفس کو بَری قرار نہیں دیتا یقیناً نفس تو بدی کا بہت حکم دینے والا ہے سوائے اس کے جس پر میرا ربّ رحم کرے۔ یقیناً میرا ربّ بہت بخشنے والا (اور) بار بار رحم کرنے والا ہے۔

[12:55] And the King said, 'Bring him to me that I may take him specially for myself.' And when he had spoken to him, he said, 'Thou art this day a man of established position and trust with us.'
[12:55] اور بادشاہ نے کہا اسے میرے پاس لے آؤ میں اسے اپنے لئے چُن لوں۔ پھر جب وہ اس سے ہم کلام ہوا تو کہا یقیناً آج (سے) تُو ہمارے حضور بہت تمکنت والا (اور) قابلِ اعتماد ہے۔

[12:56] He said, 'Appoint me over the treasures of the land, for I am a good keeper, and possessed of knowledge.'
[12:56] اس نے کہا مجھے ملک کے خزانوں پر مقرر کردے۔ میں یقیناً بہت حفاظت کرنے والا (اور) صاحبِ علم ہوں۔

[12:57] And thus did We establish Joseph in the land. He dwelt therein wherever he pleased. We bestow Our mercy on whomsoever We please, and We suffer not the reward of the righteous to perish.
[12:57] اور اس طرح ہم نے یوسف کو ملک میں تمکنت دی۔ وہ اس میں جہاں چاہتا ٹھہرتا۔ ہم اپنی رحمت جسے چاہیں پہنچاتے ہیں۔ اور ہم احسان کرنے والوں کے اجر کو ضائع نہیں کیا کرتے۔

[12:58] And surely, the reward of the Hereafter is better for those who believe and fear God.
[12:58] اور آخرت کا اجر یقیناً ان لوگوں کے لئے بہتر ہے جو ایمان لے آئے اور تقویٰ سے کام لیتے رہے۔

[12:59] And Joseph's brethren came and entered in unto him; and he knew them, but they knew him not.
[12:59] اور یوسف کے بھائی آئے تو اس کے حضور پیش ہوئے۔ پس اُس نے انہیں پہچان لیا جبکہ وہ اس سے ناواقف رہے۔

[12:60] And when he had provided them with their provision, he said, 'Bring me your brother on your father's side. Do you not see that I give you full measure of corn and that I am the best of hosts?
[12:60] اور جب اُس نے اُنہیں اُن کے سامان کے ساتھ (رخصت کے لئے) تیار کیا تو کہا تمہارے باپ کی طرف سے جو تمہارا بھائی ہے اُسے بھی میرے پاس لاؤ۔ کیا تم دیکھتے نہیں کہ میں بھرپور ماپ دیتا ہوں اور میں بہترین میزبان ہوں۔
[12:61] 'But if you bring him not to me, then there shall be no measure of corn for you from me, nor shall you come near me.'
[12:61] پس اگر تم اسے میرے پاس نہ لائے تو پھر تمہارے لئے میرے پاس کچھ ماپ نہیں ہوگا اور تم میرے قریب بھی نہ آنا۔

[12:62] They replied, 'We will try to induce his father to part with him and we will certainly do it.'
[12:62] انہوں نے کہا ہم اس کے بارہ میں اس کے باپ کو ضرور پھسلائیں گے اور ہم یقیناً ضرور کر گزرنے والے ہیں۔

[12:63] And he said to his servants, 'Put their money also into their saddlebags that they may recognize it when they return to their family; haply they may come back.'
[12:63] اور اس نے اپنے کارندوں سے کہا کہ ان کی پونجی ان کے سامان ہی میں رکھ دو تا کہ وہ اس بات کا پاس کریں جب وہ اپنے گھر والوں کی طرف واپس جائیں تاکہ شاید وہ پھر لَوٹ آئیں۔

[12:64] And when they returned to their father, they said, 'O our father, a further measure of corn has been denied us, so send with us our brother that we may obtain our measure, and we will surely take care of him.'
[12:64] پس جب وہ اپنے باپ کی طرف لَوٹے تو انہوں نے کہا اے ہمارے باپ! ہم سے ماپ روک دیا گیا ہے۔ پس ہمارے بھائی کو ہمارے ساتھ بھیج تاکہ ہم ماپ حاصل کرسکیں اور یقیناً ہم اس کے ضرور محافظ رہیں گے۔

[12:65] He said, 'I cannot trust you with him, save as I trusted you with his brother before. But Allah is the best Protector, and He is the Most Merciful of those who show mercy.'
[12:65] اس نے کہا کیا میں اس کے متعلق اس کے سوا بھی تم پر کوئی اعتماد کر سکتا ہوں جیسا کہ میں نے اس کے بھائی کے بارہ میں (اس سے) پہلے تم پر کیا تھا؟ پس اللہ ہی ہے جو بہترین حفاظت کرنے والا اور وہی سب رحم کرنے والوں سے بڑھ کر رحم کرنے والا ہے۔

[12:66] And when they opened their goods, they found their money returned to them. They said, 'O our father, what more can we desire? Here is our money returned to us. We shall bring provision for our family, and guard our brother and we shall have in addition the measure of a camel-load. That is a measure which is easy to obtain.'
[12:66] پھر جب انہوں نے اپنا سامان کھولا تو اپنی پونجی کو اپنی طرف واپس کیا ہوا پایا۔ انہوں نے کہا اے ہمارے باپ! ہمیں (اور) کیا چاہئے یہ ہے ہماری پونجی (جو) ہمیں واپس لوٹا دی گئی ہے۔ اور ہم اپنے گھر والوں کے لئے غلہ لائیں گے اور اپنے بھائی کی حفاظت کریں گے اور ایک اونٹ کا بوجھ مزید حاصل کر لیں گے۔ یہ تو بہت آسان سودا ہے۔

[12:67] He said, 'I will not send him with you until you give me a solemn promise in the name of Allah that you will surely bring him to me, unless you are encompassed.' And when they gave him their solemn promise, he said, 'Allah watches over what we say.'
[12:67] اس نے کہا میں ہرگز اسے تمہارے ساتھ نہیں بھیجوں گا یہاں تک کہ تم اللہ کے حوالہ سے مجھے پختہ عہد دو کہ تم ضرور اسے میرے پاس (واپس) لے آؤ گے سوائے اس کے کہ تمہیں گھیر لیا جائے۔ پس جب انہوں نے اسے اپنا پختہ عہد دے دیا تو اس نے کہا اللہ اُس پر جو ہم کہہ رہے ہیں نگران ہے۔

[12:68] And he said, 'O my sons, enter not by one gate, but enter by different gates; and I can avail you nothing against Allah. The decision rests only with Allah. In Him do I put my trust and in Him let all who would trust put their trust.'
[12:68] اور اس نے کہا اے میرے بیٹو! ایک ہی دروازے سے داخل نہ ہونا بلکہ متفرق دروازوں سے داخل ہونا اور میں تمہیں اللہ (کی تقدیر) سے کچھ بھی بچا نہیں سکتا۔ حکم اللہ ہی کا چلتا ہے۔ اسی پر میں توکل کرتا ہوں اور پھر چاہئے کہ اسی پر سب توکل کرنے والے توکل کریں۔

[12:69] And when they entered in the manner their father had commanded them, it could not avail them anything against Allah, except that there was a desire in Jacob's mind which he thus satisfied; and he was surely possessed of great knowledge because We had taught him, but most men know not.
[12:69] پس جب وہ جہاں سے ان کے باپ نے حکم دیا تھا داخل ہوئے۔ وہ اللہ کی تقدیر سے تو انہیں قطعاً بچا نہیں سکتا تھا مگر محض یعقوب کے دل کی ایک خواہش تھی جو اس نے پوری کی۔ اور یقیناً وہ صاحبِ علم تھا اس لئے کہ ہم نے اسے اچھی طرح علم سکھایا تھا مگر اکثر لوگ نہیں جانتے۔

[12:70] And when they visited Joseph, he lodged his brother with himself. And he said, 'I am thy brother; so now grieve not at what they have been doing.'
[12:70] پس جب وہ یوسف کے سامنے پیش ہوئے اس نے اپنے بھائی کو اپنے قریب جگہ دی (اور) کہا یقیناً میں تیرا بھائی ہوں۔ پس جو کچھ وہ کرتے رہے ہیں اس پر غمگین نہ ہو۔


[12:71] And when he had provided them with their provision, he put the drinking-cup in his brother's saddlebag. Then a crier cried, 'O ye men of the caravan, you have been guilty of theft.'
[12:71] پھر جب اس نے اُنہیں ان کے سامان سمیت (رخصت کے لئے) تیار کیا تو اس نے (بے خیالی میں) اپنے بھائی کے سامان میں پینے کا برتن رکھ دیا۔ پھر ایک اعلان کرنے والے نے اعلان کیا کہ اے قافلہ والو! تم ضرور چور ہو۔

[12:72] They said, turning towards them, 'What is it that you miss?'
[12:72] انہوں نے ان کی طرف متوجہ ہوتے ہوئے جواب دیا تم کیا گم پاتے ہو۔

[12:73] They replied, 'We miss the King's measuring-cup, and whoso brings it shall have a camel-load, and I am surety for it.'
[12:73] انہوں نے کہا ہم بادشاہ کا مَاپ تول کا پیمانہ گم کیا ہوا پاتے ہیں اور جو بھی اسے لائے گا اسے ایک اونٹ کا بوجھ (انعام میں) دیا جائے گا اور میں اس بات کا ذمہ دار ہوں۔

[12:74] They answered, 'By Allah, you know well that we came not to act corruptly in the land, and we are not thieves.'
[12:74] انہوں نے (جواباً) کہا اللہ کی قسم! تم یقیناً جان چکے ہو کہ ہم اس لئے نہیں آئے کہ زمین میں فساد کریں اور ہم ہرگز چور نہیں ہیں۔

[12:75] They said, 'What then shall be the punishment for it, if you are found to have told a lie?'
[12:75] انہوں نے پوچھا پھر اس کی کیا جزا ہو گی اگر تم جھوٹے نکلے؟

[12:76] They replied, 'The punishment for it — he in whose saddlebag it is found shall himself be the penalty for it. Thus do we punish the wrongdoers.'
[12:76] انہوں نے جواب دیا اس کی جزا یہ ہے کہ جس کے سامان میں وہ (پیمانہ) پایا جائے وہی اس کی جزا ہوگا۔ اسی طرح ہم ظالموں کو جزا دیاکرتے ہیں۔

[12:77] Then he began the search with their sacks before the sack of his brother; then he took it out from his brother's sack. Thus did We plan for Joseph. He could not have taken his brother under the King's law unless Allah had so willed. We raise in degrees of rank whomsoever We please; and over every possessor of knowledge is One, Most-Knowing.
[12:77] پھر اس (اعلان کرنے والے) نے اس (یعنی یوسف) کے بھائی کے بورے سے پہلے ان کے بوروں سے شروع کیا پھر اس کے بھائی کے بورے میں سے اس (پیمانہ) کو نکال لیا۔ اس طرح ہم نے یوسف کے لئے تدبیر کی۔ اس کے لئے ممکن نہ تھا کہ اپنے بھائی کو بادشاہ کی حکمرانی میں روک لیتا سوائے اس کے کہ اللہ چاہتا۔ ہم جسے چاہیں درجات کے لحاظ سے بلند کرتے ہیں اور ہر علم رکھنے والے سے برتر ایک صاحبِ علم ہے۔

[12:78] They said, 'If he has stolen, a brother of his had also committed theft before.' But Joseph kept it secret in his heart and did not disclose it to them. He simply said, 'You seem to be in the worst condition; and Allah knows best what you allege.'
[12:78] انہوں نے کہا اگر اس نے چوری کی ہے تو اس کے ایک بھائی نے بھی اس سے پہلے چوری کی تھی تو یوسف نے اس (الزام کے اثر) کو اپنے دل میں چھپا لیا اور اُسے ان پر ظاہر نہ کیا۔ (ہاں دل ہی دل میں) کہا تم مقام کے لحاظ سے بدترین ہو اور اللہ ہی بہتر جانتا ہے جو تم بیان کرتے ہو۔

[12:79] They said, 'O exalted one, he has a very aged father, so take one of us in his stead; for we see thee to be of those who do good.'
[12:79] انہوں نے کہا اے صاحبِ اختیار! یقیناً اس کا باپ بہت بوڑھا شخص ہے۔ پس اس کی بجائے ہم میں سے کسی ایک کو رکھ لے۔ یقیناً ہم تجھے احسان کرنے والوں میں سے دیکھتے ہیں۔

[12:80] He replied, 'Allah forbid that we should take any save him with whom we found our property; for then we should certainly be unjust.'
[12:80] اس نے کہا اللہ کی پناہ! کہ جس کے پاس ہم اپنا سامان پائیں اس کے سوا کسی اور کو پکڑیں۔ تب تو ہم یقیناً ظلم کرنے والے بن جائیں گے۔
[12:81] And when they despaired of him, they retired, conferring together in private. Their leader said, "Know ye not that your father has taken from you a solemn promise in the name of Allah and how, before this, you failed in your duty with respect to Joseph? I will, therefore, not leave the land until my father permits me or Allah decides for me. And He is the Best of judges.
[12:81] پس جب وہ اس سے مایوس ہو گئے تو مشورہ کے لئے علیحدہ ہوئے۔ ان کے بڑے نے کہا کہ کیا تم جانتے نہیں کہ تمہارے باپ نے اللہ کے حوالہ سے تم پر واجب پختہ عہد لیا تھا اور (اس سے) پہلے بھی جو تم یوسف کے معاملہ میں زیادتی کر چکے ہو۔ پس میں ہرگز یہ ملک نہیں چھوڑوں گا یہاں تک کہ میرا باپ مجھے اجازت دے یا میرے لئے اللہ کوئی فیصلہ کردے اور وہ فیصلہ کرنے والوں میں سب سے بہتر ہے۔

[12:82] "Return ye to your father and say, 'O our father, thy son has stolen and we have stated only what we know and we could not be guardians over the unseen.
[12:82] اپنے باپ کی طرف واپس جاؤ اور اسے کہو کہ اے ہمارے باپ! یقیناً تیرے بیٹے نے چوری کی ہے اور ہم سوائے اس کے جس کا ہمیں علم ہے کوئی گواہی نہیں دے رہے اور ہم یقیناً غیب کے محافظ نہیں۔

[12:83] 'And inquire of the people of the city wherein we were, and of the caravan with which we came, and certainly we are speaking the truth.'"
[12:83] پس اس بستی (والوں) سے پوچھ جس میں ہم تھے اور اس قافلہ سے بھی جس میں شامل ہو کر ہم آئے ہیں اور یقیناً ہم سچے ہیں۔

[12:84] He replied, 'Nay, but your souls have embellished to you this thing. So now comely patience is good for me. May be Allah will bring them all to me; for He is the All-Knowing, the Wise.'
[12:84] اس نے کہا (نہیں) بلکہ تمہارے نفسوں نے ایک بہت بڑے معاملہ کو تمہارے لئے ہلکا اور معمولی بنادیا ہے۔ پس صبرجمیل (کے سوا میں کیا کر سکتا ہوں)۔ عین ممکن ہے کہ اللہ ان سب کو میرے پاس لے آئے۔ یقیناً وہی ہے جو دائمی علم رکھنے والا (اور) بہت حکمت والا ہے۔

[12:85] And he turned away from them and said, 'O my grief for Joseph!' And his eyes became white because of grief, and he was suppressing his sorrow.
[12:85] اور اس نے ان سے توجہ پھیر لی اور کہا وائے افسوس یوسف پر! اور اس کی آنکھیں غم سے ڈبڈبا آئیں اور وہ اپنا غم دبانے والا تھا۔

[12:86] They said, 'By Allah, thou wilt not cease talking of Joseph until thou art wasted away or thou art of those who perish.'
[12:86] انہوں نے کہا خد اکی قسم! تُو ہمیشہ یوسف ہی کا ذکر کرتا رہے گا یہاں تک کہ تُو (غم سے) نڈھال ہوجائے یا ہلاک ہو جانے والوں میں سے ہو جائے۔

[12:87] He replied, 'I only complain of my sorrow and my grief to Allah, and I know from Allah that which you know not.
[12:87] اس نے کہا میں تو اپنے رنج واَلَم کی صرف اللہ کے حضور فریاد کرتا ہوں اور اللہ کی طرف سے میں وہ کچھ جانتا ہوں جو تم نہیں جانتے۔

[12:88] 'O my sons, go ye and search for Joseph and his brother and despair not of the mercy of Allah; for none despairs of Allah's mercy save the unbelieving people.'
[12:88] اے میرے بیٹو! جاؤ اور یوسف اور اس کے بھائی کے متعلق کھوج لگاؤ اور اللہ کی رحمت سے مایوس نہ ہو۔ یقیناً اللہ کی رحمت سے کوئی مایوس نہیں ہوتا مگر کافر لوگ۔

[12:89] And, when they came before him (Joseph), they said, 'O exalted one, poverty has smitten us and our family, and we have brought a paltry sum of money, so give us the full measure, and be charitable to us. Surely, Allah rewards the charitable.'
[12:89] پس جب وہ اس کی جناب میں حاضر ہوئے انہوں نے کہا اے صاحب اختیار! ہمیں اور ہمارے گھر والوں کو بہت تکلیف پہنچی ہے اور ہم تھوڑی سی پونجی لائے ہیں۔ پس ہمیں بھرپور تول عطا کر اور ہم پر صدقہ کر۔ یقیناً اللہ صدقہ خیرات کرنے والوں کو جزا دیتا ہے۔

[12:90] He said, 'Do you know what you did to Joseph and his brother, when you were ignorant?'
[12:90] اس نے کہا کیا تم جانتے ہو جو تم نے یوسف اور اس کے بھائی سے کیا تھا جب تم جاہل لوگ تھے۔
[12:91] They replied, 'Art thou Joseph?' He said, 'Yes, I am Joseph and this is my brother. Allah has indeed been gracious to us. Verily, whoso is righteous and is steadfast — Allah will never suffer the reward of the good to be lost.'
[12:91] انہوں نے کہا کیا واقعی تو ہی یوسف ہے؟ اس نے کہا میں ہی یوسف ہوں اور یہ میرا بھائی ہے۔ اللہ نے یقیناً ہم پر بہت احسان کیا ہے۔ یقیناً جو بھی تقویٰ کرے اور صبر کرے تو اللہ ہرگز احسان کرنے والوں کا اجر ضائع نہیں کرتا۔

[12:92] They replied, 'By Allah! Surely has Allah preferred thee above us and we have indeed been sinners.'
[12:92] انہوں نے کہا اللہ کی قسم! اللہ نے یقیناً تجھے ہم پر فضیلت دی ہے اور یقیناً ہم ہی خطا کار تھے۔

[12:93] He said, 'No blame shall lie on you this day; may Allah forgive you! And He is the Most Merciful of those who show mercy.
[12:93] اس نے کہا آج کے دن تم پر کوئی ملامت نہیں۔ اللہ تمہیں بخش دے گا اور وہ سب رحم کرنے والوں سے زیادہ رحم کرنے والا ہے۔

[12:94] 'Go with this shirt of mine and lay it before my father: he will come to know. And bring to me the whole of your family.'
[12:94] میری یہ قمیص ساتھ لے جاؤ اور میرے باپ کے سامنے اسے ڈال دو، اس پر حقیقت واضح ہوجائے گی اور (بعد میں) میرے پاس اپنے سب گھر والوں کو لے آؤ۔

[12:95] And when the caravan departed, their father said, 'Surely, I feel the scent of Joseph, even though you take me to be a dotard.'
[12:95] پس جب قافلہ روانہ ہوا تو ان کے باپ نے کہا یقیناً مجھے یوسف کی خوشبو آرہی ہے خواہ تم مجھے دیوانہ ٹھہراتے رہو۔

[12:96] They replied, 'By Allah, thou art assuredly in thy old error.'
[12:96] انہوں نے کہا اللہ کی قسم! یقیناً تُو اپنی اسی پرانی غلطی میں مبتلا ہے۔

[12:97] And when the bearer of glad tidings came, he laid it before him and he became enlightened. Then he said, 'Did I not say to you: I know from Allah what you know not?'
[12:97] پھر جب خوشخبری دینے والا آیا (اور) اس نے اُس (قمیص) کو اس کے سامنے ڈال دیا تو اس پر حقیقت واضح ہوگئی۔ اس نے کہا کیا میں تمہیں نہیں کہتا تھا کہ میں یقیناً اللہ کی طرف سے ان باتوں کا علم رکھتا ہوں جو تم نہیں جانتے؟

[12:98] They said, 'O our father, ask forgiveness of our sins for us; we have indeed been sinners.'
[12:98] انہوں نے کہا اے ہمارے باپ! ہمارے لئے ہمارے گناہوں کی بخشش طلب کر۔ یقیناً ہم خطاکار تھے۔

[12:99] He said, 'I will certainly ask forgiveness for you of my Lord. Surely, He is the Most Forgiving, the Merciful.'
[12:99] اس نے کہا میں ضرور تمہارے لئے اپنے ربّ سے بخشش طلب کروں گا۔ یقیناً وہی بہت بخشنے والا (اور) بار بار رحم کرنے والا ہے۔

[12:100] And when they came to Joseph, he put up his parents with himself, and said, 'Enter Egypt in peace, if it please Allah.'
[12:100] پس جب وہ یوسف کے سامنے پیش ہوئے تو اس نے اپنے والدین کو اپنے قریب جگہ دی اور کہا کہ اگر اللہ چاہے تو مصر میں امن کے ساتھ داخل ہو جاؤ۔
[12:101] And he raised his parents upon the throne, and they all fell down prostrate before God for him. And he said, 'O my father, this is the fulfilment of my dream of old. My Lord has made it true. And He bestowed a favour upon me when He took me out of the prison and brought you from the desert after Satan had stirred up discord between me and my brethren. Surely, my Lord is Benignant to whomsoever He pleases; for He is the All-Knowing, the Wise.
[12:101] اور اس نے اپنے والدین کو عزت کے ساتھ تخت پر بٹھایا اور وہ سب اس کی خاطر سجدہ ریز ہو گئے۔ اور اس نے کہا اے میرے باپ! یہ تعبیر تھی میری پہلے سے دیکھی ہوئی رؤیا کی۔ میرے ربّ نے اسے یقیناً سچ کر دکھایا اور مجھ پر بہت احسان کیا جب اس نے مجھے قید خانہ سے نکالا اور تمہیں صحرا سے لے آیا بعد اس کے کہ شیطان نے میرے اور میرے بھائیوں کے درمیان رخنہ ڈال دیا تھا۔ یقیناً میرا ربّ جس کے لئے چاہے بہت لطف و احسان کرنے والا ہے۔ بے شک وہی دائمی علم رکھنے والا (اور) بہت حکمت والا ہے۔

[12:102] 'O my Lord, Thou hast bestowed power upon me and taught me the interpretation of dreams. O Maker of the heavens and the earth, Thou art my Protector in this world and the Hereafter. Let death come to me in a state of submission to Thy will and join me to the righteous.'
[12:102] اے میرے ربّ! تو نے مجھے امورِ سلطنت میں سے حصہ دیا اور باتوں کی اصلیّت سمجھنے کا علم بخشا۔ اے آسمانوں اور زمین کے پیدا کرنے والے! تُو دنیا اور آخرت میں میرا دوست ہے۔ مجھے فرمانبردار ہونے کی حالت میں وفات دے اور مجھے صالحین کے زُمرہ میں شامل کر۔

[12:103] That is of the tidings of the unseen, which We reveal to thee. And thou wast not with them when they agreed upon their plan while they were plotting.
[12:103] یہ غیب کی خبروں میں سے ہے جسے ہم تیری طرف وحی کرتے ہیں اور تُو ان کے پاس نہیں تھا جب انہوں نے اپنی بات پر اتفاق کر لیا تھا جبکہ وہ (بُرے) منصوبے بنا رہے تھے۔

[12:104] And most men will not believe even though thou eagerly desire it.
[12:104] اور اکثر انسان، خواہ تُو کتنا بھی چاہے، ایمان لانے والے نہیں بنیں گے۔

[12:105] And thou dost not ask of them any reward for it. On the contrary, it is but a source of honour for all mankind.
[12:105] اور تو اُن سے اس (خدمت) پر کوئی اجر نہیں مانگتا۔ یہ تو محض تمام جہانوں کے لئے ایک نصیحت ہے۔

[12:106] And how many a Sign is there in the heavens and the earth, which they pass by, turning away from it.
[12:106] اور آسمانوں اور زمین میں کتنے ہی نشان ہیں جن پر وہ گزرتے رہتے ہیں اس حال میں کہ وہ ان سے منہ پھیرے ہوئے ہوتے ہیں۔

[12:107] And most of them believe not in Allah without also attributing partners to Him.
[12:107] اور ان میں سے اکثر اللہ پر ایمان نہیں لاتے مگر اس طرح کہ وہ شرک کر رہے ہوتے ہیں۔

[12:108] Do they, then, feel secure from the coming on them of an overwhelming punishment from Allah or the sudden coming of the Hour upon them while they are unaware?
[12:108] پس کیا وہ اس بات سے امن میں ہیں کہ ان کے پاس اللہ کے عذاب میں سے کوئی ڈھانپ دینے والی (مصیبت) آئے یا (انقلاب کی) گھڑی اچانک آجائے جب کہ وہ (اس کا) کوئی شعور نہ رکھتے ہوں۔

[12:109] Say, 'This is my way: I call unto Allah on sure knowledge, I and those who follow me. And Holy is Allah; and I am not of those who associate gods with God.'
[12:109] تُو کہہ دے کہ یہ میرا راستہ ہے۔ میں اللہ کی طرف بلاتا ہوں۔ میں بصیرت پر ہوں اور وہ بھی جس نے میری پیروی کی۔ اور پاک ہے اللہ اور میں مشرکوں میں سے نہیں۔

[12:110] And We sent not before thee as Messengers any but men, whom We inspired, from among the people of the towns. Have they not then travelled in the earth and seen what was the end of those before them? And surely, the abode of the Hereafter is better for those who fear God. Will you not then understand?
[12:110] اور ہم نے تجھ سے پہلے بستیوں کے باشندوں میں سے کبھی کسی کو نہیں بھیجا مگر مَردوں کو جن کی طرف ہم وحی کیا کرتے تھے۔ پس کیا انہوں نے زمین میں سیر نہیں کی کہ وہ دیکھ سکتے کہ اُن لوگوں کا انجام کیسا تھا جو ان سے پہلے تھے۔ اور آخرت کا گھر ہی اُن لوگوں کے لئے بہتر ہے جنہوں نے تقویٰ سے کام لیا۔ پس کیا تم عقل نہیں کرتے؟
[12:111] Till, when the Messengers despaired of the disbelievers and they (the disbelievers) thought that they had been told a lie, Our help came to them, then was saved he whom We pleased. And Our chastisement cannot be averted from the sinful people.
[12:111] یہاں تک کہ جب پیغمبر (ان سے) مایوس ہو گئے اور (لوگوں نے) خیال کیا کہ اُن سے جھوٹ بولا گیا ہے تو ہماری مدد اُن تک پہنچی۔ پس جسے ہم نے چاہا وہ بچا لیا گیا۔ اور ہمارا عذاب مجرم قوم سے ٹالا نہیں جا سکتا۔

[12:112] Assuredly, in their narrative is a lesson for men of understanding. It is not a thing that has been forged, but a fulfilment of that which is before it and a detailed exposition of all things, and a guidance and a mercy to a people who believe.
[12:112] یقیناً ان کے تاریخی واقعات کے بیان میں اہلِ عقل کے لئے ایک بڑی عبرت ہے۔ یہ کوئی جھوٹے طور پر بنایا ہوا قصّہ نہیں بلکہ اس کی تصدیق ہے جو اس کے سامنے ہے اور ہر چیز کی خوب وضاحت ہے اور ہدایت اور رحمت ہے ان لوگوں کے لئے جو ایمان لاتے ہیں۔